Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن نے کہا ہے کہ طب کا شعبہ صرف علمی صلاحیت کو جانچنے کا نام نہیں ہے بلکہ اس شعبہ سے منسلک شخص میں انسانیت کا ہونا بہت ضروری ہے  
     
  16-May-2019  
     
   
     
  میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن نے کہا ہے کہ طب کا شعبہ صرف علمی صلاحیت کو جانچنے کا نام نہیں ہے بلکہ اس شعبہ سے منسلک شخص میں انسانیت کا ہونا بہت ضروری ہے، ڈاکٹر کی جانب سے مریض کو صرف نسخہ تجویز کردینے سے بات نہیں بنتی بلکہ ڈاکٹر کا مریض سے ہمدردی رکھنا ضروری ہے، طب کا شعبہ نرسنگ کے شعبے سے پہنچانا جاتا ہے، بلدیہ عظمیٰ کراچی نرسوں کو اگلے گریڈ میں ترقی دینے کے ساتھ ساتھ ان کی جدید خطوط پر تربیت کے انتظامات بھی کر رہی ہے، طبی سہولیات کی بہتر فراہمی کے لئے مزید نرسنگ اسٹاف کی ضرورت ہے مگر یہ بھی حقیقت ہے کہ پہلے سے موجود اداروں کو مستحکم اور نرسوں کو ان کی صلاحیتوں میں اضافے کیلئے جدید خطوط پر استوار کیا جائے، شہر میں نئے میڈیکل کالج بھی بن رہے ہیں مگر پہلے سے موجود مڈ وائفری اور میڈیکل کالجوں کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے اور یہ بہتری صرف دیواروں کی خوبصورتی اور رنگ و روغن کی چمک کا نام نہیں ہے بلکہ یہ خوبصورتی اعلیٰ صلاحیتوں سے ہمکنار اور قابل نرسنگ اسٹاف کی موجودگی سے ہوتی ہے، ان خیالات کااظہار انہوں نے عالمی نرسنگ ڈے کے موقع پر کے ایم سی اسپورٹس کمپلیکس کشمیر روڈ میں دوسرے میٹروپولیٹن نرسنگ ایوارڈ دیئے جانے کے موقع پر منعقدہ تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا، تقریب سے سینئر ڈائریکٹر کوآرڈینیشن مسعود عالم، سینئر ڈائریکٹر میڈیکل اینڈ ہیلتھ سروسز ڈاکٹر بیربل گینانی، ڈائریکٹر نرسنگ حکومت سندھ شبیر جھٹیال، کنٹرولر ایگزامینیشن خیرالنسائ، مسز مارگریٹ اور دیگر نے بھی خطاب کیا، تقریب کی نظامت کے فرائض علی حسن ساجد نے انجام دیئے، اس موقع پر خدمت کے وعدے کے حوالے سے نرسوں نے خصوصی ٹیبلو بھی پیش کیا اور فلورنس نائیٹ اینجل نے امن و امید کی نشانی شمع (موم بتی) مہمان خصوصی کی خدمت میں پیش کی، تقریب میں مجموعی طور پر 45 نرسوں کو دوسرا میٹروپولیٹن نرسنگ ایوارڈ پیش کیا گیاان نرسوں کا تعلق بلدیہ عظمیٰ کراچی کے مختلف اسپتالوں کے علاوہ نیشنل انسٹیٹیوٹ آف کارڈیو ویسکیولر ڈیزیز، نیشنل انسٹیٹیوٹ آف چائلڈ ہیلتھ، انڈس اسپتال، ٹراما سینٹر سول اسپتال اور آغا خان اسپتال سے تھا، مہمان خصوصی ڈاکٹر سید سیف الرحمن نے مزید کہا کہ نرسنگ کے شعبہ کو نرسنگ سے شناخت ملتی ہے، نرسنگ کے شعبہ کو جب تک قومی سطح پر اہمیت نہیں دی جاتی یہ شعبہ ترقی نہیں کرسکتا، ضرورت اس امر کی ہے کہ شعبہ نرسنگ اور مڈ وائفری کو آگے لایا جائے اور اس پر بھر پور توجہ دی جائے، انہوں نے کہا کہ ہمیں اپنے اسپتالوں میں ڈاکٹرز سے زیادہ قابل نرسوں کی ضرورت ہے جو اداروں اور اسپتالوں کو چلا سکیں، جب تک میرے اپنے گھر اور آپ کے گھر سے شعبہ نرسنگ میں شامل ہونے کے لئے لوگ نہیں نکلیں گے اور ہماری ذاتی دلچسپی نہیں ہوگی تو اس وقت تک ہم اس شعبہ کو آگے نہیں لاسکتے، ہمیں نرسوں کو جدید نصاب فراہم کرنا ہوگا اور جدید خطوط پر ان کی تربیت کرنا ہوگی تاکہ وہ اپنی فیلڈ میں باعتماد ہوکر کام کرسکیں، انہوں نے کہا کہ ہائی ویز پر سفر کے دوران مختلف مقامات پر مراکز صحت کے بورڈز اور ساتھ ہی بعض خستہ حال عمارتیں نظر آتی ہیں مگر یہ چند عمارتیں صرف اور صرف اپنے بوسیدہ وجود کے ذریعے اپنے خالی پن کا احساس دلاتی ہیں کیونکہ ان عمارتوں میں پتھر اور اینٹیں تو ہوتی ہیں مگر روح نہیں ہوتی، وہ روح قابل نرسوں کے یہاں آنے سے ہی پیدا ہوگی ،انہوں نے کہا کہ ہندو ستان اور فلپائن سے تعلق رکھنے والی نرسیں دنیا بھر میں اہمیت رکھتی ہیں اس کی وجہ ان کی قابلیت کے ساتھ ساتھ ان کا انگریزی زبان سے واقفیت رکھنا بھی ہوتا ہے، بلدیہ عظمیٰ کراچی اپنے اسپتالوں میں نرسوں کو انگریزی زبان کی تربیت دینے کے ساتھ ساتھ ان میں جدید اسکلز کو اجاگر کرنے کے لئے اپنے تمام تر ذرائع استعمال کرے گی، یہ ہمارا نصب العین ہے کہ کوئی بھی کام ناممکن نہیں ہوتا ہم مسلسل جدوجہد کے ساتھ اپنے اسپتالوں کی حالت کوبہتر کرسکتے ہیں اور کر رہے ہیں، سینئر ڈائریکٹر میڈیکل اینڈ ہیلتھ سروسز ڈاکٹر بیربل گینانی نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میئر کراچی وسیم اختر اور میٹرپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن نرسنگ کے شعبہ کو بہتر سے بہتر بنانے کیلئے تمام تر اقدامات کررہے ہیں یہی وجہ ہے کہ نرسنگ ایوارڈز کے حوالے سے ہم نے پچھلے سال بھی ایک بڑی اور کامیاب تقریب کی تھی اور اس سال بھی تقریب کرنے میں کامیاب ہوئے ہیں، انہوں نے کہا کہ نرسنگ سے متعلق جو بھی مسائل ہیں انہیں بلدیہ عظمیٰ کراچی حل کرنے کی مکمل کوشش کررہی ہے، ڈائریکٹر نرسنگ حکومت سندھ شبیر جھٹیال نے تقریب سے خطا ب کرتے ہوئے کہا کہ صوبہ سندھ نرسنگ کا حب ہے، ضرورت اس امر کی ہے کہ اس شعبہ پر زیادہ سے زیادہ توجہ دی جائے ابھی حال ہی میں صدر مملکت نے ایوان صدر میں نرسنگ کی خدمات کے حوالے سے انہیں خراج تحسین پیش کیا جس سے نرسنگ کے شعبہ کی بھر پور حوصلہ افزائی ہوئی ہے، کنٹرولر خیر النساء نے کہا کہ نرسنگ کے ساتھ ساتھ بنیادی ہیلتھ سائنسز کو ہائی لائٹ کیا جائے، واضح رہے کہ انسانیت کے لئے نرسنگ اسٹاف کے شعبہ کی بے مثال خدمات کے اعتراف کے طور پر ہر سال 12 مئی کو دنیا بھر میں نرسنگ اسٹاف کا عالمی دن منایا جاتا ہے جس کا مقصد صحت کے شعبہ میں نرسنگ اسٹاف کی اہمیت کو اجاگر کرنا ہے، 12مئی1820 جدید نرسنگ اسٹاف کی بانی فلورنس نائیٹ اینجل (Florence Nightingale) کا یوم پیدائش بھی ہے، فلورنس نائیٹ اینجل نے دکھی انسانیت کی خدمت کی لازوال مثال پیش کرتے ہوئے دنیا کو بہترین پیغام دیا اور نرسنگ اسٹاف کے شعبہ میں قابل تقلید مثال قائم کی جس کے بعددنیا بھر میں ان کا نام نرسنگ اسٹاف کے پیشے کی شناخت بن گیا۔  
     
     
   
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard