Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے سندھ انوائرمینٹل پروٹیکشن ایجنسی(سیپا) کی جانب سے بن قاسم میں کوئلہ ذخیرہ (اسٹوریج ) کرنے کی منظوری جاری کرنے کی اطلاعات پر تشویش کا اظہارکیا-  
     
  16-Aug-2019  
     
   
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے سندھ انوائرمینٹل پروٹیکشن ایجنسی(سیپا) کی جانب سے بن قاسم میں کوئلہ ذخیرہ (اسٹوریج ) کرنے کی منظوری جاری کرنے کی اطلاعات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس اقدام سے کراچی میں ماحولیاتی آلودگی میں اضافہ ہوگا اور شہر میں بیماریاں پھیلیں گی ، اپنے ایک بیان میں میئر کراچی نے کہا کہ سیپا کو یہ اختیار نہیں کہ وہ سپریم کورٹ کے احکامات کے برعکس کوئی اقدام کرے، سپریم کورٹ نے پہلے ہی کوئلہ رکھنے کے ناکافی انتظامات کے باعث کراچی پورٹ ٹرسٹ میں کوئلے کی درآمد پر پابندی عائد کی ہوئی ہے اور کراچی بھر میں کھلی جگہ پر کوئلہ ذخیرہ کرنے کو ممنوع قرار دیتے ہوئے صرف ویئر ہائوس میں ہی محفوظ طریقے سے اسے منتقل کرنے کی ہدایت کی ہے لہٰذا اس پابندی کا اطلاق پورے شہر کی حدود میں ہوتاہے جبکہ بن قاسم بھی کراچی کی حدود میں ہے، انہوں نے خدشہ ظاہر کیاکہ بن قاسم ٹائون میں مجوزہ 23 ایکڑ پر محیط کول اسٹوریج پروجیکٹ شہر میں خطرناک فضائی آلودگی کا باعث بنے گا جس سے شہریوں کو سانس کی تکلیف اور دیگر بیماریاں ہوسکتی ہیں لہٰذا اس قسم کے پروجیکٹ کی منظوری دینے سے قبل ماحولیاتی تحفظ کے لئے قائم اداروں سے مشاورت اور شہریوں کی رائے ضروری ہے، انہوں نے کہا کہ سندھ انوائرمینٹل پروٹیکشن ایجنسی(سیپا) کے قیام کا مقصد صوبے میں ماحولیاتی آلودگی کے خلاف اقدامات کرنا اور شہریوں کو فضائی آلودگی سے بچانا ہے تاہم حیرت کی بات ہے کہ سپریم کورٹ کی ہدایات کے باوجود اتنی بڑی مقدار میں کوئلے کو کھلی جگہ ذخیرہ کرنے کی اجازت دے دی گئی جس سے نہ صرف اطراف کے علاقے میں رہائش پذیر افراد بلکہ کراچی کے تمام شہریوں کی صحت کو سنگین خطرات لاحق ہوسکتے ہیں لہٰذا شہریوں کے وسیع تر مفاد میں ہم سیپا سے مطالبہ کرتے ہیں کہ اس فیصلے پر نظرثانی کی جائے تاکہ شہر اور صوبے کو ماحولیاتی آلودگی سے بچایا جاسکے، انہوں نے کہا کہ شہریوں کے بنیادی حقوق کے پیش نظر کوئلے جیسی دھات کی نقل و حمل اور ذخیرہ کرنا ایک نہایت حساس معاملہ ہے ، خاص طور پر رہائشی علاقوں کے نزدیک کوئلے کے ذخائررکھنے کی ہرگز اجازت نہیں ہونی چاہئے، کراچی میں بحری حیاتیات پر بھی اس کے مضر اثرات مرتب ہونے کا امکان ہے لہٰذا ہر ممکن احتیاطی تدابیر اختیار کی جائیں اور اس اجازت کو واپس لیا جائے۔  
     
     
   
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard