Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ گولیمار میں گرنے والی عمارت سے ہونے والے نقصان اور قیمتی جانوں کے ضائع ہونے کے مسئلے کو حکومت سندھ سمیت ہر فورم پر اٹھائیں گے-  
     
  06-Mar-2020  
     
   
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ گولیمار میں گرنے والی عمارت سے ہونے والے نقصان اور قیمتی جانوں کے ضائع ہونے کے مسئلے کو حکومت سندھ سمیت ہر فورم پر اٹھائیں گے تاکہ اس واقعہ کے ذمہ داروں کا تعین ہوسکے اور انہیں سزا دی جاسکے، انہوں نے کہا کہ اس واقعہ کی مکمل ذمہ دارسندھ حکومت اور سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے افسران ہیں، انہوں نے کہا کہ جو اس واقعہ کے ذمہ دار ہیں وہ یہاں آنے کی ہمت بھی نہیں کر پارہے ، انہوں نے کہا کہ ایس بی سی اے کا مقصد ہر طرح سے صرف پیسہ کمانا رہ گیا ہے، کراچی شہر کے ساتھ یہ کیا سلوک کیا جا رہا ہے ، حکومت سندھ اس کا نوٹس لے ،یہ بات انہوں نے جمعہ کے روز اس واقعہ میں جاں بحق ہونے والے افراد کی نماز جنازہ میں شرکت اور متاثرہ عمارت میں ہونے والے امدادی کاموں کا جائزہ لینے کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہی، اس موقع پر میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن، سینئر ڈائریکٹر کوآرڈنیشن مسعود عالم اور متعلقہ افسران بھی موجود تھے، میئر کراچی نے کہا کہ اس واقعہ میں ایس بی سی اے ملوث ہے ، 17 جانیں چلی گئیں اور شہریوں کی جمع پونجی لٹ گئی انہوں نے کہا کہ حکومت سندھ اور ایس بی سی اے کے افسران معصوم عوام کودھوکا دینا بند کریں ان کی محنت کی کمائی ضائع نہ کریں ، بہت عرصے سے پورے شہر میں یہ معاملات چل رہے ہیں لیکن اس کا نوٹس نہیں لیا جارہا، ایس بی سی اے کے افسران رشوت لے کر غیرقانونی عمارات تعمیر کروا رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ جب تک کراچی بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی تھی تو کچھ نہ کچھ شہر میں عمارات کی تعمیر کے حوالے سے کنٹرول تھا لیکن ایس بی سی اے بننے کے بعد پورے شہر کو آزادی دے دی گئی ہے کہ وہ جو چاہے وہ کریں ، پورا ادارہ تباہ و برباد ہوگیا ہے ، وزیراعلیٰ سے درخواست کرتا ہوں کہ وہ کارروائی کریں، ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ذمہ داران کے خلاف کارروائی حکومت سندھ کرے گی یہ میرے دائرہ اختیار میں نہیں ہے، انہوں نے کہا کہ اب ایسے اقدامات کئے جائیں کہ اس شہر میں مزید ایسے واقعات نہ ہوں، میئر کراچی نے کہا کہ عمارت میں پھنسے ہوئے افراد کو نکالنے کے لئے تمام تر کوششیں جاری ہیں اور ابتدائی 36 گھنٹے ملبے میں پھنسے ہوئے افراد کے لئے انتہائی اہم ہوتے ہیں، ریسکیو اور فائر بریگیڈ کی ٹیم نے بتایا ہے کہ ابھی خدشہ ہے کہ ایک سے دو افراد زمین بوس ہونے والی عمارت کے ملبے تلے موجود ہیں ،متاثرہ بلڈنگ کے ملبے کو تمام تر احتیاطی تدابیر اختیار کرتے ہوئے ہٹایا جا رہا ہے ، انہوں نے لواحقین سے درخواست کی کہ وہ صبر کا مظاہرہ کریں ، بلدیہ عظمیٰ کراچی کے متعلقہ محکموں کے تمام ماہرین یہاں موجود ہیں اور وہ قیمتی جانوں کو بچانے کی ہر ممکن کوشش کررہے ہیں، انہوں نے کہا کہ مینول طریقے سے فی الحال متاثرہ عمارت کو منہدم کیا جا رہا ہے لیکن جب یہ یقین ہوجائے گا کہ کوئی شخص اس عمارت میں زندہ موجود نہیں ہے تو بھاری مشینری کے ذریعے عمارت کو منہدم کردیا جائے گا ، میئر کراچی نے لواحقین سے اظہار تعزیت کیا اور کہا کہ یہ حادثہ ہم سب کے لئے بہت بڑا ہے اور جن خاندانوں کو صدمہ پہنچا ہے وہ صبر کا مظاہرہ کریں ، انہوں نے کہا کہ جو زخمی عباسی شہید اسپتال میں داخل ہیں ان کے علاج معالجے میں کوئی کسر اٹھا نہیں رکھی جائے اور بلدیہ عظمیٰ کراچی ہر طرح سے سہولت مہیا کرے گی، میئر کراچی نے وزیر اعلیٰ سندھ سے اس سانحہ کی مکمل تحقیقات کا مطالبہ کیا اور کہا کہ کب تک ایس بی سی اے شہریوں کی جانوں سے کھیلتی رہے گی اب خدا کے لئے بس کردیں اور شہریوں کو جینے دیں ۔  
     
     
 
News Photo Gallery
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 

 
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard