Home  
    Administrator  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  ایڈمنسٹریٹر کراچی افتخار علی شالوانی نے کہا ہے کہ کے ایم سی کے زیر انتظام جن پلوں اور فلائی اوورز کے جوائنٹ ایکس ٹینشن ٹوٹ گئے ہیں یا خراب ہوگئے ہیں ان کو بھی تبدیل کیا جائے گا-  
     
  03-Oct-2020  
     
   
     
  ایڈمنسٹریٹر کراچی افتخار علی شالوانی نے کہا ہے کہ کراچی میں شدید بارشوں کے باعث سڑکیں ٹوٹ پھوٹ گئی ہیں اور گلیوں میں بارش کا پانی جمع ہونے کے باعث گڑھے پڑگئے ہیں انہیں بھرنے اور سڑکوں کو موٹر ایبل بنانے کے لئے پیج ورک کاکام شروع کردیا گیا ہے اور جن سڑکوں کی تعمیر اور استر کاری سالانہ ترقیاتی پروگرام میں شامل ہے ان کا کام بھی جاری ہے اور کوشش ہے کہ جلد سے جلد ان کاموں کو مکمل کیا جائے ،غریب آباد فلائی اوور کے جوائنٹ ایکس ٹینشن کی تبدیلی کاکام جاری ہے، کے ایم سی کے زیر انتظام جن پلوں اور فلائی اوورز کے جوائنٹ ایکس ٹینشن ٹوٹ گئے ہیں یا خراب ہوگئے ہیں ان کو بھی تبدیل کیا جائے گا، یہ بات انہوں نے ہفتہ کے روز ایم ٹی خان روڈ ،وڈ اسٹریٹ اور اولڈ کوئنز روڈ کے دورے کے موقع پر کیا ، ایڈمنسٹریٹر کراچی نے کہا کہ کے ایم سی کے زیر انتظام کراچی کے 104 بڑی سڑکیں ہیں جبکہ دیگر سڑکوں کی تعمیر و مرمت ڈسٹرکٹ میونسپل کارپویشنز کی ذمہ داری ہے، اسی طرح کراچی کا لینڈ کنٹرول کرنے والے دیگر ادارے بھی سڑکوں کی تعمیر و مرمت کے ذمہ دار ہیں، میری کوشش ہے کہ تمام ادارے مل کر اپنی اپنی حدود میں آنے والی سڑکوں اور گلیوں کی مرمت کاکام ترجیحی بنیادوں پر کریں اور جہاں کے ایم سی کی مدد کی ضرورت ہو وہ ہم دینے کے لئے تیار ہیں، انہوں نے کہا کہ میں نے ڈائریکٹر جنرل پارکس کوہدایت کی ہے کہ وہ گزشتہ روز سے شروع ہونے والی شجر کاری مہم میں کے ایم سی کی سڑکوں کے درمیان گرین بیلٹس اور سڑکوں کے دونوں اطراف درخت لگائیں اور سبزہ کاری ہیں تاکہ ان سڑکوں پر سفر کرنے والے شہریوں میں خوشگوار احساس پیدا ہو، اس موقع پر انہوں نے وڈ اسٹریٹ پر تعمیر ہونے والے سائنس سینٹر کا بھی دورہ کیا جہاں انہیں بتایا گیا کہ اس سینٹر میں اسکولوں کے طلبہ و طالبات کے لئے سائنسی تربیت کا عملی اہتمام کیا گیا ہے جہاں بچے کھیل کھیل میں مختلف سائنسی تجربات سے استفادہ کریں گے، چیف آپریٹنگ آفیسر سائنس سینٹر فصیح الدین بیا بانی اور ثمرینہ دائود نے بتایا کہ یہ عمارت تین منزلہ ہے جس میں ہیلتھ ایریا، ٹرانسپورٹیشن ایریا اور فیملی لرننگ کا پروگرام ترتیب دیا گیا ہے، پاکستان میں ڈیموں کی صورتحال اور پانی کی تقسیم کے حوالے سے بھی بچوں کے لئے عملی تربیت کا بھی اہتمام کیا گیا ہے، ایڈمنسٹریٹر کراچی نے پروجیکٹ کی افادیت کو سراہتے ہوئے کہا کہ وہ شہریوں کو اس پروجیکٹ سے متعلق آگہی فراہم کریں تاکہ وہ اس سے استفادہ کرسکیں، انہوں نے کہا کہ سائنس کی تعلیم کے بغیر کوئی بھی ملک ترقی نہیں کرسکتا، ترقی کے منازل کے لئے سائنس اور ٹیکنالوجی کو بنیادی حیثیت حاصل ہے وہ ممالک جنہوں نے سائنس اور ٹیکنالوجی کی اہمیت کو سمجھا وہ آج نہ صرف ترقی یافتہ اور خوش حال ممالک کی صف میں شامل ہیں جبکہ معاشی طور پر بھی انتہائی مستحکم ہیں پڑوسی ملک چین کی مثال ہمارے سامنے ہے اور آج دنیا کے تمام بڑے بڑے برانڈز کی فیکٹریاں اور کارخانے چین میں موجود ہیں، انہوں نے سائنس کی ٹیکنالوجی کی بدولت جتنے کم عرصے میں ترقی کی ہے وہ اپنی مثال آپ ہے، انہوں نے کہا کہ اب روایتی ہتھیاروں سے کوئی بھی جنگ نہیں جیتی جاسکتی سائنس اور ٹیکنالوجی ہی وہ واحد راستہ ہے جس پر چل کر ہم طرح کی کامیابی حاصل کرسکتے ہیں، انہوں نے کہا کہ سرکاری سطح پر ایسے اداروں کی سرپرستی کی ضرورت ہے جو سائنس اور ٹیکنالوجی کے حوالے سے کام کررہے ہیں اور آنے والی نسل کو بھی اس طرف راغب کرنا ضروری ہے، انہوں نے کہا کہ آنے والا دور ہی جدید ٹیکنالوجی اور سائنس کا ہی دور ہوگا اور وہی قومیں دنیا میں ترقی کرسکیں گی جو اس کی اہمیت و افادیت سے واقف ہونگی۔  
     
     
 
News Photo Gallery
 
 
 
 
 
 
 
 
 

 
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard