Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کے ایم سی کے تمام اسپتالوں کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹس کو ہدایت کی ہے کہ اسپتالوں میں ڈاکٹرز اور پروفیسرز کی حاضری یقینی بنائی جائے  
     
  02-Jan-2017  
     
   
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کے ایم سی کے تمام اسپتالوں کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹس کو ہدایت کی ہے کہ اسپتالوں میں ڈاکٹرز اور پروفیسرز کی حاضری یقینی بنائی جائے، ٹیچنگ اسٹاف اسپتالوں میںلازماً ڈیوٹی دیں اور اسپتالوں کے میڈیکل فضلے کو سائنسی بنیادوں پر ٹھکانے لگانے کے انتظامات کئے جائیں ،یہ ہدایت انہوں نے اپنے دفتر میں بلدیہ عظمیٰ کراچی کے تمام اسپتالوں کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹس کے ساتھ ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے دی، اس موقع پر میونسپل کمشنر ڈاکٹر بدر جمیل، سینئر ڈائریکٹر میڈیکل سروسز ڈاکٹر محمد علی عباسی، عباسی شہید اسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر ندیم راجپوت، سوبھراج اسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر سید محمد علی، اسپنسر آئی اسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر بیربل، سرفراز رفیقی شہید اسپتال کے ڈاکٹر عرفان احمد رضوی، کارڈیک کیریئر یونٹ لانڈھی کے ایم ایس ڈاکٹر شکیل احمد سمیت کے ایم سی کے دیگر اسپتالوں کے ایم ایس بھی موجود تھے، میئر کراچی نے کہا کہ پہلے ہی اسپتالوں میں ادویات، ایکسرے اور دیگر سہولیات کی کمی ہے، اس پر اگر ڈاکٹرز بھی ڈیوٹی پر نہ ہوں تو مریضوں کو طبی سہولیات کون مہیا کرے گا، انہوں نے کہا کہ اب ایسا نہیں چلے گا، اسپتال انتظامیہ خاص طور پر ڈاکٹرز اور پروفیسرز کو اپنی روش تبدیل کرنی ہوگی انہوں نے میں اچانک کسی بھی اسپتال کا دورہ کروں گا ، ڈاکٹر ز اور پیرامیڈیکل اسٹاف اگر لاپرواہی میں ملوث پایا گیا تو اس کے ساتھ کوئی رعایت نہیں ہوگی، میئر کراچی نے ہدایت کی کہ کے ایم سی کے اسپتالوں میں تمام عملہ صبح ساڑھے 8 بجے موجود ہونا چاہئے جبکہ رات کے اوقات میں بھی ضروری عملہ اسپتال میں موجود رہے اور شہر میں جو بھی ایمرجنسی صورتحال ہو اس کا سامنا کرے، انہوں نے کہا کہ اگر سرکاری ملازمت کرنی ہے تو ڈاکٹرزاور پیرامیڈیکل اسٹاف کو اسپتال میں اپنی ڈیوٹی پر موجود رہنا ہوگا تاکہ مریضوں کو کوئی شکایت نہ ہو انہوں نے ہدایت کی کہ کے ایم سی کے اسپتالوں کے میڈیکل فضلے کی فروخت کو روکا جائے اور اسے سائنسی بنیادوں پر حفوظ انداز میں ٹھکانے لگانے کے اقدامات کئے جائیںاس موقع پر سینئر ڈائریکٹر میڈیکل سروسز محمد علی عباسی نے بتایا کہ ہمارے پاس فی الوقت فضلے کو ٹھکانے لگانے کے لئے دوIncineraters ہیں ایک کے ایم ڈی سی میں اور دوسرا لپروسی اسپتال منگھوپیر میں موجود ہے، میئر کراچی نے کہا کہ یہ نہایت حساس معاملہ اس کا براہ راست تعلق شہریوں کی صحت سے ہے لہٰذا اس معاملے میں کوئی کوتاہی نہیں ہونی چاہئے، استعمال شدہ سرنجز، ڈرپس کا سامان اور دیگر فضلے کو اسپتال سے باہر جانے سے روکا جائے اس موقع پر میڈیکل سپرنٹنڈنٹس نے شکایت کی کہ ٹیچنگ پر مامور اسٹاف اسپتالوں میں اپنے فرائض انجام نہیں دیتا جس پر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے میئر کراچی نے ہدایت کی کہ KMDC کے ٹیچنگ اسٹاف کی اگر اسپتالوں میں ڈیوٹی ہے تو وہ لازماً اپنی ڈیوٹی دیں۔ آئندہ اس حوالے سے کوئی شکایت نہیں ہونی چاہئے، انہوں نے کہا کہ بلدیہ عظمیٰ کراچی کے تحت کام کرنے والے طبی اداروں کا مقصد شہریوں کو بہتر طبی سہولیات مہیا کرنا ہے اگر ہم اسپتالوں کی حالت بہتر بنانے پر توجہ نہیں دیں گے تو یہ مقصد حاصل نہیں ہوسکتا لہٰذا تمام طبی اداروں میں مامور افسران اور ماتحت عملہ ایمانداری اور محنت کے ساتھ اپنے فرائض انجام دے۔  
     
     
   
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard