Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Municipal Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ کراچی کے ٹیکس سے یہ صوبہ اور ہمارا ملک چلتا ہے، اس شہر اور ملک کی تعمیر و ترقی میں یہاں کے تاجروں کا نمایاں کردار ہے،  
     
  07-Jan-2017  
     
   
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ کراچی کے ٹیکس سے یہ صوبہ اور ہمارا ملک چلتا ہے، اس شہر اور ملک کی تعمیر و ترقی میں یہاں کے تاجروں کا نمایاں کردار ہے، اس شہر کے مسائل حل کرنے کیلئے تمام تاجروں کا ایک پلیٹ فارم پر جمع ہونا انتہائی خوش آئند ہے، اتحاد ہی میں برکت ہے، ہم اپنے اتحاد سے ہی اس شہر کے مسائل کو حل کریں گے، حکومت کو چاہئے کہ وہ اس شہر سے جتنا زیادہ ریونیو حاصل کرتی ہے تو اس شہر پر بھی اتنی ہی زیادہ توجہ دے لیکن ایسا ہو نہیں رہا، کراچی اس وقت بڑے پیکیج کا منتظر ہے، میری وزیر اعظم سے درخواست ہے کہ وہ کراچی کے لئے بڑے پیکیج اور فنڈز کا اعلان کریں تاکہ یہاں کے مسائل حل ہوسکیں، جنرل مشرف کے دور میں کراچی کو سب سے زیادہ فنڈز فراہم کئے گئے تو اس وقت شہر کے لئے کام بھی کرکے دکھایا گیا اب وزیر اعظم پاکستان کو چاہئے کہ وہ کراچی کے لئے مشرف سے زیادہ فنڈز فراہم کریں تاکہ ریکارڈ ٹوٹ سکے، کراچی کو فراہم کئے گئے فنڈز کے حوالے سے مشرف کا ریکارڈ جمہوری لیڈروں کو توڑنا چاہئے ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے آل کراچی تاجر اتحاد کی دعوت پر اولڈ سٹی ایریا میں منعقدہ ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر آل کراچی تاجر اتحاد کے چیئرمین عتیق میر، کپڑا مارکیٹ کے چیئرمین ایس عالم، اکرم رعنا سمیت تاجروں اور دکانداروں کی بڑی تعداد نے شرکت کی قبل ازیں میئر کراچی وسیم اختر کی آمد کے موقع پر ان کا والہانہ استقبال کیا گیا، میئر کراچی وسیم اختر نے اپنے خطاب میں مقامی تاجروں اور دکانداروں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ انہیں اس بات کی خوشی ہے کہ یہاں کہ تمام لوگ اور تاجر برادری شہر کے مسائل حل کرنے کے معاملے پر ایک ہیں، انہوں نے کہا کہ یہاں کے تاجر شہری مسائل حل کرنے میں منتخب بلدیاتی نمائندوں کا ہاتھ بٹائیں، انہوں نے کہا کہ وہ آئندہ چند روز میں خصوصی بیگز یہاں کے دکانداروں کو فراہم کریں گے تاکہ وہ کچرے کو اس میں ڈال سکیں صبح اور شام کے اوقات میں دو گاڑیاں آکر کچرے کے ان بیگز کو لے جایا کریں گی انہوں نے کہا کہ دکاندار خود بھی یہ بیگز بنواسکتے ہیں اس طرح وہ ہمارا ہاتھ بٹائیں گے اور ان بیگز کو مخصوص مقامات پر رکھ کر اطراف میں واقع تمام دکانوں میں کام کرنے والوں کو یہ بتایا دیا جائے کہ اب وہ کچرا سڑک پر نہیں پھینکیں گے بلکہ فراہم کئے گئے بیگز میں ڈالیں گے انہوں نے کہا کہ اس طرح ہم ایک مثال قائم کرسکتے ہیں اور اس طریقہ کار کو شہر کی مختلف مارکیٹس میں رائج کیا جائے گا تاکہ صفائی نصف ایمان ہے پر عمل کرتے ہوئے اس کام کو جہاد کی صورت میں آگے بڑھایا جائے، میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ گزشتہ آٹھ سالوں میں شہر میں کام نہ ہونے کے باعث صورتحال انتہائی خراب ہوچکی ہے جگہ جگہ کچرے کے ڈھیر جبکہ سڑکوں کی حالت خراب ہے انہوں نے کہا کہ آپ لوگ حکومت کو ٹیکس دیتے ہیں لہٰذا یہ آپ کا حق ہے کہ آپ کے مسائل بھی حل ہوں ہم نے اختیارات اور وسائل نہ ہوتے ہوئے بھی شہر کی چند منتخب یوسیز میں 100 روزہ صفائی مہم کا آغاز کیا ہے جس کا مقصد صرف اور صرف یہ بتانا ہے کہ اگر ہم انتہائی محدود وسائل میں چند علاقوں کو صاف ستھرا رکھ سکتے ہیں تو وسائل کی فراہمی کے بعد شہر بھر میں صفائی ستھرائی سمیت تمام مسائل کو حل کیا جاسکتا ہے انہوں نے کہا کہ ہم نے وزیر اعلیٰ سندھ کو بھی اپنی تجاویز دی ہیں وزیر اعلیٰ خود بھی شہر کے لئے بہت فکر مند ہیں اور اس شہر کے مسائل حل کرنا چاہتے ہیں، انہوں نے کہا کہ لوکل گورنمنٹ جمہوریت کی نرسری ہے لہٰذااس نرسری کی نشونما بھر پور طریقے سے کی جانی چاہئے تاکہ یہاں سے نکل کر ملکی سیاست میں جانے والے لوگ اس ملک کے لئے بہتر سے بہتر انداز میں کام کرسکیں، انہوںنے کہا کہ گزشتہ آٹھ سالوں میں نہ صرف کراچی میں کام نہیں ہوا بلکہ صوبے کے دیگر شہروں میں بھی کام نہیں ہوئے، آخر وہ سب پیسہ کہاں گیا، انہوں نے کہا کہ عدالتی حکومت پر بلدیاتی الیکشن تو کرادیئے گئے مگر کچھ اس انداز میں کہ منتخب نمائندے اتنے مجبور ہیں کہ وہ کچھ چاہتے ہوئے بھی شہر کے لئے وہ سب کچھ نہیں کر پارہے جس کی توقع عوام ان سے کررہے ہیں جس کی وجہ صرف اور صرف یہ ہے کہ وہ تمام امور اور کام مثلاً سیوریج، ٹرانسپورٹ، پانی، بلڈنگ کنٹرول، ماسٹر پلان یہاں تک کہ کچرا اٹھانے تک کا کام بھی سندھ حکومت کے پا س ہے انہوں نے کہا کہ یہ عجیب بات ہے کہ اس شہر کے لوگوں نے جن کو ووٹ سے منتخب کیا ان کے پاس کوئی اختیار نہیں ہے جبکہ جو لوگ اس شہر سے منتخب نہیں ہوئے ان کے پاس سارے اختیارات ہیں، میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ اسلام آباد میں بیٹھنے والے لیڈرز یہ سمجھ لیں کہ اصل طاقت یہی عام عوام ہیں یہی لوگ اور تاجر جب ٹیکس دیتے ہیں تو حکومت ملک کا بجٹ بنا پاتی ہے اگر حکمران لوگوں کو اپنے ساتھ لے کر چلیں اور ان کے مسائل حل کریں تو ان کی حکومتوں کو بھی خطرات لاحق نہیں ہونگے اور باآسانی اپنے اقتدار کا وقت پوراکرسکتے ہیں اصل طاقت یہی عوام ہیں، قبل ازیں آل کراچی تاجر اتحاد کے چیئرمین عتیق میر نے میئر کراچی وسیم اختر کو خوش آمدید کہتے ہوئے کہا کہ میئر کراچی میں کام کرنے کا جنون اور شہر کے مسائل حل کرنے کا جذبہ موجود ہے، انہوں نے کہا کہ حکومت میئر کراچی سمیت بلدیاتی نمائندوں کو مضبوط کرے اور انہیں اختیارات دے تاکہ یہ لوگ بھر پور طریقے سے کام کرسکیں، ماضی میں اولڈ سٹی ایریا کے علاقے نظر انداز ہوتے رہے ہیں اب ہم امید کرتے ہیں کہ میئر کراچی اپنی ٹیم کے ساتھ ہمارے مسائل حل کریں گے۔  
     
     
   
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard