Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ دنیا بھر میں وفاقی اور صوبائی حکومتوں کو عوامی مسائل کے بہتر او رپائیدار حل کے لیے بلدیاتی اداروں کی مدد کرنی ہوگی۔  
     
  03-Jul-2017  
     
   
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ دنیا بھر میں وفاقی اور صوبائی حکومتوں کو عوامی مسائل کے بہتر او رپائیدار حل کے لیے بلدیاتی اداروں کی مدد کرنی ہوگی۔انفارمیشن اینڈ کمیونی کیشن ٹیکنالوجی کے ذریعے اسمارٹ سٹی اور اربن ڈیویلپمنٹ کا مقصد حاصل کیا جا سکتا ہے۔ بلدیاتی حکومت واحد ادارہ ہے جو عام آدمی کی ضروریات کو پورا کرتا ہے، کمزور بلدیاتی ادارے شہریوں کی روزمرہ ضروریات کو پورا نہیں کرسکتے۔ کراچی شہر اپنی ذمہ داریوں سے بخوبی آگاہ ہے اور سنگاپور ‘ایمسٹرڈیم‘ بارسیلونا‘ میڈرڈ اور سٹاک ہوم وغیرہ کی طرز پر اسمارٹ سٹی بننے کی جانب اپنی کوششیں جاری رکھے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے روس کے شہر Ulyanovskمیں 27تا 30جون 2017 چوتھی Wegoجنرل اسمبلی 2017 کے دوران منعقد ہونے والی ورلڈ میئر کانفرنس میں شرکت کے بعد وطن واپسی پر اپنے دفتر میں میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔اس کانفرنس میں ترکی‘ جنوبی کوریا‘ روس‘ افغانستان‘ نائجیریا‘ سری لنکا‘ تھائی لینڈ ‘ ایتھوپیا‘ غانا‘ریوانڈا‘ یوگنڈا‘ کینیا‘ انڈونیشیا‘ نیپال‘ میکسیکو‘ ملائیشیا‘ جنوبی افریقہ‘ بھوٹان‘ ازبکستان‘ ہنڈراس ‘ پیرو‘ بیلاروس‘ فلپائن اور چائنیز تائی پی سمیت مختلف ممالک کے بڑے شہروں کے میئرز ‘ ڈپٹی میئرز‘ ایگزیکٹو آفیسرز‘میونسپل کمشنرز‘ چیئرمینز‘ گورنرز‘کونسلراور ہیڈ آف ایڈمنسٹریشنز نے شرکت کی جبکہ میئر کراچی وسیم اختر اور میئر پشاورمحمد عاصم خان نے کانفرنس میں پاکستان کی نمائندگی کی۔ کانفرنس کا مقصد اسمارٹ اور Sustainableشہر اور ریجن کے لیے قائدانہ صلاحیت اور وژن کے تصور کودنیا کے سامنے پیش کرنا تھا تاکہ مستقبل میں جدید انفارمیشن اینڈ کمیونی کیشن ٹیکنالوجی کے ذریعے دنیا کے مختلف شہروں کو اسمارٹ سٹیز میں تبدیل کیا جا سکے۔ کانفرنس کے مختلف سیشنز کے دوران میئر کراچی وسیم اختر سمیت دیگر شہروں کے میئرز نے اپنے شہروں کی ترقی ‘پلاننگ اور مستقبل کے منصوبوں کے حوالے سے اظہار خیال کیا۔ میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ انفارمیشن اینڈ کمیونی کیشن ٹیکنالوجی کے ذریعے انفارمیشن سسٹم اسکولوں‘ کتب خانوں‘ ٹرانسپورٹ سسٹم‘ اسپتالوں‘ پاور پلانٹس‘ واٹر سپلائی نیٹ ورک‘ ویسٹ مینجمنٹ‘ پارکنگ پلازہ‘قانون پر عملدرآمد اور دیگر شعبوں میں کارکردگی بہتر بنا کر شہریوں کو بہترین خدمات فراہم کی جاسکتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگرچہ کراچی میں ICTبیسڈ پروگرام پر عملدرآمد شروع نہیں ہوا ہے تاہم سٹیزن کمپلینٹ انفارمیشن اینڈ مینجمنٹ سسٹم ‘ڈیجیٹل کال سینٹرز اور دیگر اقدامات کے ذریعے جدید ٹیکنالوجی سے مدد لی جارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ کچی آبادیوں کے بڑھنے کی وجہ سے میونسپل سروسز پر اضافی بوجھ پڑتا ہے اور اربنائزیشن کی رفتار کو سنبھالنا مشکل ہوجاتا ہے ،2030تک دنیا بھر میں سالانہ اربن سینٹرز میں 65ملین افراد کی ضروریات کو پور اکرنے کے لیے صوبائی اور وفاقی حکومتوں کو بلدیاتی اداروں کی مدد کرنی ہوگی۔ کراچی شہر میں 17مختلف ادارے شہری خدمات فراہم کررہے ہیںجہاں اجتماعی سوچ اور جدوجہد کے ذریعے ہی مسائل پر قابو پانا ممکن ہے۔ انہوں نے کہا کہ انتظامی‘ مالیاتی اور قانونی طور پر کمزور میونسپل گورنمنٹ مستقبل کے چیلنجز کا سامنا نہیں کرسکتی لہٰذا اس ضمن میں سب کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ شہر کی بہتری کے لیے ہمیں جن شعبوں میں بہت زیادہ کام کرنے کی ضرورت ہے ان میں سالڈ ویسٹ مینجمنٹ، ماسٹر پلان، ٹرانسپورٹ، پارک اینڈ پلے گرائونڈ، واٹر اینڈ سیوریج ، پاور جنریشن ، کچی آبادیوں کی ریگولرائزیشن، مالیاتی ایوارڈز، مردم شماری اورپبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے شعبے سرفہرست ہیں۔انہوں نے کہا کہ اسمارٹ سٹی کے قیام کے لیے پہلے ہمیں مسئلے کا تعین کرنا ہے اور اس کے بعد لوگوں میں آگاہی پیدا کرکے اور سب کو ساتھ لے کر چلنا ہے اور مسائل کا حل نکالنا ہے۔ ہم نے اس جانب قدم بڑھا دیے ہیں اور ہمیں پوری امید ہے کہ اسمارٹ اور Sustainbableشہر بننے کی جانب ہماری یہ پیش رفت کامیابی سے ہمکنار ہوگی اور کراچی کے شہریوں کو مستقبل میں بہتر بلدیاتی سہولیات حاصل ہوں گی۔  
     
     
   
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard