Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  بلدیہ عظمیٰ کراچی کی سٹی کونسل کے پارلیمانی لیڈر اسلم شاہ آفریدی نے کہا ہے کہ لوکل گورنمنٹ ہی جمہوریت کی نرسری ہے-  
     
  04-Jan-2018  
     
   
     
  بلدیہ عظمیٰ کراچی کی سٹی کونسل کے پارلیمانی لیڈر اسلم شاہ آفریدی نے کہا ہے کہ جب تک لوکل گورنمنٹ کے نظام کو مضبوط نہیں بنایا جاتا اس وقت تک عوامی مسائل حل کرنے میں مشکلات درپیش رہیں گی، لوکل گورنمنٹ ہی جمہوریت کی نرسری ہے ، دیگر شہروں سے کراچی آنے والے منتخب بلدیاتی نمائندوں سے درخواست ہے کہ وہ کراچی کو اس کا حق دلانے کے لئے ہر سطح پر آواز اٹھائیں کیونکہ یہ کراچی ہی ہے جہاں پاکستان کے ہر گھر کا ایک نہ ایک فرد ضرور موجود ہے اور کراچی کا معاشی پہیہ چلنے سے ہی ملکی معیشت کی گاڑی آگے بڑھتی ہے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلعی کونسل سوات کے ایک 20 رکنی وفد سے ملاقات کے موقع پر کیا، جس نے ضلع کونسل سوات کے ممبر اور گروپ لیڈر فضل معبود کی سربراہی میں جمعرات کی دوپہر بلدیہ عظمیٰ کراچی کی عمارت کا دورہ کیا اور سٹی کونسل کراچی کے اراکین سے ملاقات کی اس موقع پر چیئرمین ریکریشن کمیٹی حنیف سورتی، چیئرمین چارجڈ پارکنگ محمدمرسلین، چیئرمین کچی آبادی سعد بن جعفر اور سینئرڈائریکٹر کوآرڈینیشن مسعود عالم بھی موجود تھے، وفد نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انہیں اس بات پر بہت دکھ ہے کہ وہ کراچی جو پورے پاکستان کو آگے لے جا رہا ہے، اس شہر پر ہی حکومت کی توجہ نہیں ہے انہوں نے کہا کہ ہم وفاقی اور صوبائی حکومتوں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ مفادات کی جنگ میں الجھنے کے بجائے کراچی اور کراچی والوں کا خیال کریں اور کراچی کو مسائل کی دلدل سے نکالنے کے لئے یہاں کے منتخب بلدیاتی نمائندوں کو مضبوط بنائیں جب یہ منتخب بلدیاتی نمائندے مضبوط ہوں گے تو لوکل گورنمنٹ کا نظام بھی مستحکم ہوگا، وفد نے کہا کہ کے پی کے میں بلدیاتی نظام بہت موثر ہے، ضلع کونسل سوات کے اراکین کی تعداد 101 ہے جو مختلف سیاسی پارٹیوں سے وابستہ ہیں ، ضلع سوات کی آبادی تقریباً 22 لاکھ ہے جبکہ لوکل گورنمنٹ کا نظام بھی تین سطح پر خدمات انجام دے رہا ہے جس میں ویلج کونسل ، تحصیل کونسل اور ضلع کونسل شامل ہیں، وفد نے بتایا کہ وہ پاکستان کے مختلف شہروں کے مطالعاتی دوروں پر نکلے ہیں اب تک انہوں نے اسلام آباد اور لاہور کے دورے مکمل کرلئے ہیں تیسرے مرحلے میں وہ کراچی پہنچے ہیں، وفد نے کہا کہ تقریباً 10 سال پہلے جب کراچی کو دیکھا تھا تو وہ تیزی سے ترقی کرتا ہوا شہر تھا مگر اب گزشتہ 10 سالوں میں یہ شہر مسائل کا انبار نظر آرہا ہے اور اس شہر کو دیکھ کر ہمارا دل خون کے آنسو روتا ہے، انہوں نے کہا کہ کراچی صرف ایک شہر کا نام نہیں بلکہ یہ پورا پاکستان ہے، حکومت یہاں کی لوکل گورنمنٹ کے ساتھ ناانصافی نہ کرے بلکہ اسے اختیارات دے تاکہ اس شہر کے منتخب لوگ شہر کے مسائل حل کرسکیں، چیئرمین ریکریشن کمیٹی حنیف سورتی نے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ 10 سالوں میں کراچی میں کسی بھی ادارے پر توجہ نہیں دی گئی یہ شہر اب کچرے کا ڈھیر بن گیا ہے جسے صاف کرنے کے لئے میئر کراچی وسیم اختر اپنی ٹیم کے ہمراہ سڑکوں پر نکل آئے ہیں اور دیگر اداروں کے تعاون سے اس شہر میں موجود گزشتہ 10 سالوں کا کچرا صاف کرا رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ میئر کراچی کو دو کروڑ سے زائد کے ترقیاتی کام کرانے کا اختیار نہیں جبکہ یونین کمیٹی کو محض دو لاکھ روپے دیئے جاتے ہیں جبکہ عملے کی تنخواہوں پر تین لاکھ روپے سے زائد خرچ ہوجاتے ہیں، سینئر ڈائریکٹر کوآرڈینیشن مسعود عالم نے وفد کو بریفنگ دی اور بتایا کہ کراچی کی زمین پر بلدیہ عظمیٰ کراچی کا انتظامی کنٹرول صرف 27 فیصد حصے پر ہے جبکہ دیگر حصوں پر دوسرے اداروں کا انتظامی کنٹرول ہے جن میں سول ایوی ایشن، کنٹونمنٹ بورڈ، پاکستان ریلوے اور دیگر ادارے شامل ہیں، اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے اسلم شاہ آفریدی نے کہا کہ میئر کراچی وسیم اختر اور ان کی ٹیم وسائل کی عدم دستیابی کے باوجود عزم اور حوصلہ کے ساتھ شہریوں کے مسائل حل کرنے کے لئے مسلسل کام کر رہی ہے ، میئر کراچی نے تمام بلدیاتی نمائندوں پر واضح کردیا ہے کہ ہمیں وسائل کے ہونے یا نہ ہونے کی بحث میں نہیں پڑنا بلکہ جو دستیاب وسائل ہیں ان میں رہتے ہوئے آگے بڑھنا ہے، انہوں نے کہا کہ ہماری خواہش ہے کہ یہاں آنے والے مہمان اس شہر کے حوالے سے اپنی شہروں میں جا کر اپنے اپنے اداروں میں آواز اٹھائیں اور بتائیں کہ کراچی کے ساتھ کس قدر ناانصافی کی جا رہی ہے انہوں نے کہا کہ کراچی کی آبادی کسی بھی طرح پونے تین کروڑ سے کم نہیں ہے مگر جب آبادی ہی کم دکھائی جائے تو صحیح پلاننگ کیسے ہوگی، انہوں نے کہا کہ میئر کراچی اور ان کی ٹیم کا جذبہ کبھی سرد نہیں ہوگا ہم سب اس شہر اور شہریوں کی خدمت کا سفر جاری رکھیں گے۔ اس موقع پر دونوں جانب سے کونسل کے مونوگرام پر مشتمل سوینئر پیش کئے گئے ۔  
     
     
 
News Photo Gallery
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 

 
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard