Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ فریئر ہال سے متعلق مفاہمتی یادداشت پر دستخط سے قبل حکومت سندھ ،کے ایم سی اور ہیریٹیج سے متعلق تمام قوانین کو پیش نظر رکھا گیا ہے اور ان کی پاسداری کی جائے گی-  
     
  06-Apr-2018  
     
   
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ کراچی کی عمارتوں ، کھیل کے میدانوں، باغات اور دیگر اثاثوں کی حفاظت اور بہتری ہماری ذمہ داری ہے ہم کوئی بھی ایسا کام نہیں ہونے دیں گے جو شہر اور شہریوں کے مفادات کے خلاف ہو ، گارجیئن بورڈ کراچی سے پیار کرنے والوں پر مشتمل ہے ، فریئر ہال سے متعلق مفاہمتی یادداشت پر دستخط سے قبل حکومت سندھ ،کے ایم سی اور ہیریٹیج سے متعلق تمام قوانین کو پیش نظر رکھا گیا ہے اور ان کی پاسداری کی جائے گی، فریئر ہال اور اس سے ملحقہ باغ جناح اور پروجیکٹ ایریا کی دیکھ بھال اور بہتر انتظام کے لئے شہر کی معروف شخصیات، تاجر، صنعتکار، ماہر قانون، فنون لطیفہ ، میڈیا سے وابستہ شخصیات، سینئر سٹیزنز اور بلدیاتی نمائندوں پر مشتمل 19 رکنی گارجیئن بورڈ تشکیل دیا گیا ہے اس مفاہمتی یادداشت کو سٹی کونسل میں پیش کرکے منظوری لی جائے گی اس کے بعد ہی کام کا آغاز کیا جائے گا، ان خیالات کا اظہار میئر کراچی نے جمعہ کی شام فریئر ہال میں گارجیئن بورڈ کی تشکیل کے لئے مفاہمتی یاداشت (MoU) پر دستخط کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر شاہد فیرو ز، جمیل یوسف، امین ہاشوانی، ارشد طیب علی، دُریا قاضی، محمد سلیم خان، کومل پرویز، میونسپل کمشنر ڈاکٹر اصغر عباس، سینئر ڈائریکٹر کوآرڈینیشن مسعود عالم، سینئر ڈائریکٹر قانونی امور عذرا مقیم، ڈائریکٹر کلچر شمس مسعودی، ڈائریکٹر کلچر اینڈ اسپورٹس خورشید شاہ اور دیگر افسران بھی موجود تھے جبکہ زندگی مختلف شعبوں سے وابستہ سرکردہ شخصیات اور میڈیا کے نمائندوں سمیت معززین شہر نے بھی شرکت کی، معاہدے پر بلدیہ عظمیٰ کراچی کی جانب سے میئر کراچی وسیم اختر اور گارجیئن بورڈ کے چیئرمین شاہد فیروز نے دستخط کئے، میئر کراچی بورڈ کے پیٹرن ان چیف ہیں جبکہ دیگر ارکان میں چیئرمین شاہد فیروز، امین ہاشوانی، ارشد طیب علی، آصف فینسی ، دُریا قاضی، غازی صلاح الدین، جمیل یوسف، کومل پرویز، محمد سلیم خان، پرویز سعید، محمد طارق ہدیٰ، شاہد عبداللہ، یاور عباس جیلانی، میونسپل کمشنر بلدیہ عظمیٰ کراچی کے ایم سی کونسل کی کلچر اور پارکس اینڈ ہارٹیکلچر کے کمیٹیوں کے چیئرمین، ڈائریکٹر جنرل پارکس اینڈ ہاٹیکلچر اور ڈائریکٹر کلچر بلدیہ عظمیٰ کراچی شامل ہیں، میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ یہ کوئی این جی او نہیں ہے اور نہ ہی فریئر ہال کو کسی کے حوالے کیا جا رہا ہے میں نے ان نامور لوگوں کے پاس خود گیا تھا اور ان سے درخواست کی تھی کہ وہ میرا ساتھ دیں ، گارجیئن بورڈ فریئر ہال، صادقین گیلری، لیاقت ہال لائبریری، گارڈن سمیت پروجیکٹ ایریا کی حفاظت و نگہداشت کے لئے اپنی خدمات دے گا اور اس کی حالت زار کو سدھارنے کے لئے مالی وسائل کی فراہمی کے ساتھ ساتھ اس کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرتے ہوئے، خوبصورت جدید ترین اور پرکشش بنائے گا جہاں شہریوں کو پرسکون ماحول میں تفریح و طبع کے مواقع میسر آئیں گے، انہوں نے کہا کہ تشکیل دیئے جانے والے گارجیئن بورڈ کی یہ ذمہ داری بھی ہوگی کہ وہ اس تاریخی ورثہ اور یہاں موجود آرٹ ورک کی حفاظت کے ساتھ ساتھ ثقافتی سرگرمیوں کے فروغ کے لئے مثبت کردار ادا کرے گاجس پر سختی سے عمل کیا جائے گا جبکہ گارجیئن بورڈ اس بات کو بھی یقینی بنائے گا کہ یہاں سے ہونے والی آمدنی اسی پروجیکٹ ایریا کی بہتری پر خرچ کی جائے جس کا چارٹرڈ کمپنی سے باقاعدہ سالانہ آڈٹ کرایا جائے گا اور مالیاتی رپورٹ مشتہر کی جائے گی، میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ شہر کی معروف شخصیات پر مشتمل گارجیئن بورڈ میں شفاف، بے لوث اور بااعتماد افراد کی شمولیت اس بات کا واضح ثبوت ہے کہ ہم نیک نیتی کے ساتھ فریئر ہال کو اس کا کھویا ہوا مقام واپس دلانا چاہتے ہیں لہٰذا ان افراد کی موجود گی میں اب لوگوں کے ذہنوں سے بے بنیاد شکوک و شبہات اور تمام تحفظات و خدشات دور ہوجانے چاہئیں، اس موقع پر بتایا گیا کہ پروجیکٹ ایریا فریئر ہال کی عمارت بشمول صادقین آرٹ گیلری اور لیاقت ہال لائبریری کے علاوہ باغ جناح گارڈن پر مشتمل ہوگا اور معاہدے کے تحت گارجیئن بورڈ سندھ کلچرل ہیریٹیج پراپرٹی رولز 2017 ء کی پاسداری کرے گا اور سندھ کلچرل ہیریٹیج (تحفظ ) ایکٹ 1994ء میں درج شرط نمبر 8(1) کے تحت ہیریٹیج پراپرٹی میں مجاز اتھارٹی کی منظوری کے بغیر کوئی تبدیلی نہیں ہوسکے گی، یہ معاہدہ ابتدائی طور پر پانچ سال کے لئے ہے تاہم اس کی میعاد ختم ہونے سے پہلے باہمی رضا مندی سے مزید پانچ سال کی توسیع ہوسکے گی گارجیئن بورڈ بلدیہ عظمیٰ کراچی یا حکومت سندھ سے کوئی معاوضہ لینے کا حقدار نہیں ہوگا تاہم فریئر ہال میں تعینات بلدیہ عظمیٰ کراچی کا عملہ بدستور گارجیئن بورڈ کے تحت کام کرتا رہے گا، ایگزیمنٹ کی کسی بھی شق کی خلاف ورزی پر بلدیہ عظمیٰ کراچی 30 یوم کا تحریری نوٹس دے کر معاہدہ ختم کرنے کی مجاز ہوگی، فریقین کے درمیان کسی بھی تنازعہ میں ثالثی کے لئے سپریم کورٹ ، ہائیکورٹ یا NCDR سے ریٹائرڈ جج کا تقرر بطور ثالث کیا جائے گا جبکہ اس معاہدہ کا اطلاق سٹی کونسل کی منظوری حاصل کرنے والے دن سے ہو گا، گارجیئن بورڈ معاہدے کے تحت حکومت سندھ اور کے ایم سی کی طرف سے جاری ہونے والی ہدایات ، نوٹیفکیشن، حکم ناموں وغیرہ پر مکمل طور پر عملدرآمد کرے گا، تقریب سے چیئرمین گارجیئن بورڈ شاہد فیروز ، جمیل یوسف نے بھی خطاب کیا ، انہوں نے کہا کہ اس عمارت کو انگریزوں نے بنایا لیکن ہم اس کی دیکھ بھال اس طرح نہیں کرسکے جو اس کا حق تھا، آئیں مل کر ہم اس شہر کو بچائیں، تمام معاملات شفاف رکھے جائیں گے یہاں صادقین کی لازوال پینٹنگ تباہ ہو رہی ہے ، میورل دھوپ میں پڑے ہیں اور کوئی دیکھنے والا نہیں، ہم فریئر ہال کو اس قابل بنائیں گے کہ شہری اپنے خاندان کے افراد کے ہمراہ یہاں آئیں اور لطف اندوز ہوں، ہمیں اچھائی اور برائی میں فرق کرنا ہوگا جب اچھا کام ہوتا ہے تو لوگ تنقید کا نشانہ بناتے ہیں ، یہ ہمارا شہر ہے اور ہم اس کی بہتری کے لئے کام کرنا چاہتے ہیں۔  
     
     
 
News Photo Gallery
 
 
 
 
 
 
 
 
 

 
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard