Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ سال 2018-19 ء کے مالی سال کے لئے ریونیو کے جو اہداف مقرر کئے گئے ہیں انہیں تمام محکمہ جاتی سربراہان ہر صورت میں پورا کریں-  
     
  31-Jul-2018  
     
   
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ سال 2018-19 ء کے مالی سال کے لئے ریونیو کے جو اہداف مقرر کئے گئے ہیں انہیں تمام محکمہ جاتی سربراہان ہر صورت میں پورا کریں اور جو محکمہ جاتی سربراہ ریونیو کے حصول میں ناکام ہوں گے ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی اور ایسے افسران کی حوصلہ افزائی کی جائے گی جو ریونیو کے حصول میں معاون ثابت ہوں، انہوں نے کہا کہ ہر ماہ تمام افسران محکمہ جاتی اہداف کے حصول کے گوشوارے میٹروپولیٹن کمشنر کے دفتر میں جمع کرائیں گے کیونکہ ادارے کو مستحکم بنانے کے لئے اہداف کا حصول لازمی ہے، یہ بات انہوں نے منگل کے روز اپنے دفتر میں ریونیو سے متعلق ہونے والے ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی، میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن، مشیر مالیات ڈاکٹر اصغر عباس، ڈائریکٹر کوآرڈینیشن مسعود عالم، ڈائریکٹر ٹیکنیکل میئر سیکریٹریٹ ایس ایم شکیب، ڈائریکٹر بجٹ محمود بیگ اور دیگر افسران نے اجلاس میں شرکت کی، میئر کراچی نے گزشتہ مالی سال کے ریونیو کے اہداف مکمل طور پر حاصل نہ کرنے پر تشویش کا اظہار کیا اور مختلف محکموں کے سربراہان اور متعلقہ افسران سے تحریری طور پر اس کی وجوہات پیش کرنے کے لئے کہا، انہوں نے کہا کہ افسران کو چاہئے کہ وہ ریونیو میں اضافے اور سال 2018-19 ء کے لئے مقرر کئے گئے اہداف میں اضافے کے لئے مثبت تجاویز پیش کریں تاکہ ان پر عمل کیا جاسکے، انہوں نے کہا کہ ہمارا مالی سال کے ابتداء میں ہی یہ عزم ہوناچاہئے کہ ہم اپنے ادارے اور شہر کے لئے انتہائی جانفشانی اور اپنی تمام تر صلاحیتوں سے کام کریں گے تاکہ اس شہر کی تعمیر و ترقی اور بہتری کے لئے اقدامات کئے جاسکیں، میئر کراچی نے مشیر مالیات کو ہدایت کی کہ غیر ترقیاتی بجٹ اور غیرضروری اخراجات کو کم سے کم کیا جائے اور مختلف محکموں سے آنے والے مالیاتی بلوں کی سخت سے جانچ پڑتال کرکے ادائیگی کی جائے، میئر کراچی نے ہدایت کی کہ محکمہ میونسپل یوٹیلیٹی چارجز ٹیکس کا دائرہ کار وسیع کرے اور شہر کے تمام رہائشی یونٹس اور کمرشل اداروں کی نیٹ ورکنگ کی جائے تاکہ بلدیہ عظمیٰ کراچی کے ریونیو میں اضافہ کیا جاسکے، انہوں نے کہا کہ دوسرے بلدیاتی اداروں سے لئے گئے رہائشی اور کمرشل یونٹس کے ڈیٹا بیس پر انحصار کے بجائے ازخود ایک مکمل سروے کراکر صارفین سے متعلق تفصیلات کو کمپیوٹرائز ڈ کیا جائے ، انہوں نے کہا کہ کے ایم سی کی مارکیٹوں میں واقع دکانوں اور اسٹالز کے کرایہ جات نہ ہونے کے برابر ہیں اور انتہائی کاروباری اہمیت کے حامل مارکیٹوں میں بعض دکانوں کا کرایہ 500 روپے ماہوار تک ہے جس میں اضافے کے لئے فوری اقدامات کی ضرورت ہے انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں جو کمیٹی تشکیل دی ہے وہ اپنا ہوم ورک مکمل کرکے ایک ہفتے کے اندر رپورٹ دے تاکہ ان دکانوں اور اسٹالز کے نیلام عام کے لئے کرایہ جات مقرر کئے جاسکے جس کی سٹی کونسل سے باقاعدہ منظوری لی جائے گی، میئر کراچی نے بچت بازار کے حوالے سے کہا کہ جو 64 غیرقانونی بازار شہر میں لگائے جا رہے ہیں انہیں فوری طور پر نوٹسز دیئے جائیں اور 97 قانونی بچت بازاروں کے کرایہ جات بڑھانے سے متعلق جو معاملات عدالت میں ہے اس کی کارروائی کو تیز کیا جائے اور بچت بازار ایسوسی ایشن سے مذاکرات کے ذریعے اس مسئلے کو جلد حل کیا جائے۔  
     
     
   
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard