Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ محرم الحرام کے انتظامات کے لئے ایس او پی بنا ہوا ہے جس میں مزید بہتری لانے کے لئے علماء کرام تجاویز دیں، فنڈزکے حوالے سے بار بار بات کرنا مجبوری ہے -  
     
  04-Sep-2018  
     
   
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ بلدیاتی اداروں نے دو سال کے دوران اپنا 70 سے 75 فیصد بجٹ پانی و سیوریج کے چھوٹے چھوٹے کاموں پر لگا دیا، بڑے پروجیکٹ کے لئے ہمارے پاس وسائل نہیں، کوشش کی ہے کہ محرم الحرام سے قبل امام بارگاہوں اور مساجد کے سامنے اور اطراف پانی و سیوریج کے مسائل حل کئے جائیں، مختلف اضلاع میں سڑکوں کی مرمت و پیوندکاری کرارہے ہیں ، محدود وسائل میں رہتے ہوئے چھوٹے چھوٹے ایشوز کو دیکھ رہے ہیں ،کاش میرے پاس اتنے فنڈز ہوتے کہ پورے شہر کا انفراسٹرکچر ٹھیک کر رہا ہوتا، کراچی پورے ملک کو پالتا ہے مگر خود توجہ سے محروم ہے، یہاں پانی و سیوریج اور سالڈ ویسٹ مینجمنٹ کا انفراسٹرکچر ٹھیک ہونا چاہئے، K-IV کا پانی موجودہ لائنوں میں آیا تو وہ اسے برداشت نہیں کرپائیں گی، مختلف امام بارگاہوں کے اطراف کئی لاکھ اسکوائر فٹ سڑکوں کی کارپیٹنگ کی گئی ہے، شہر کی حالت کو بہتر بنانا اپنی ذمہ داری سمجھتے ہیں،خواہ یہ ایک دو دن کے لئے ہو یا پورے مہینے کے لئے محرم الحرام کے انتظامات کے لئے ایس او پی بنا ہوا ہے جس میں مزید بہتری لانے کے لئے علماء کرام تجاویز دیں، فنڈزکے حوالے سے بار بار بات کرنا مجبوری ہے ، کراچی کے شہریوں کو حقائق کا علم رہنا چاہئے، یہ بات انہوں نے محرم الحرام کے انتظامات کے حوالے سے کے ایم سی ہیڈ آفس میں منعقد ہونے والے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی، اس موقع پر ضلع وسطی کے چیئرمین ریحان ہاشمی، ضلع غربی کے چیئرمین اظہار احمد خان، میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن، ڈی آئی جی سائوتھ جاوید عالم اوڈھو، کے ایم سی کونسل میں پارلیمانی لیڈر اسلم شاہ آفریدی، میونسپل کمشنر ضلع شرقی، کے ایم سی کی مختلف کمیٹیوں کے چیئرمینز کے علاوہ علامہ عباس کمیلی، سید اختر عباس زیدی، علامہ ذوہیر عابدی، حاجی حنیف طیب، مولانا اکبر درس، سید باقر حسین رضوی، مفتی بلال قادری، علی کرار نقوی، عمران احمد سلفی، اطہر حسین جعفری، خالد نور، عمیر قادری، مولانا ساجد جعفری، مفتی عبدالحمید، علامہ ڈاکٹر جمیل راٹھور، موسیٰ بھائی، مولانا عمر صادق اور دیگر علماء کرام بھی موجود تھے، قبل ازیں میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن نے اجلاس کے شرکاء کو خوش آمدید کہتے ہوئے کہا کہ محرم الحرام کا مہینہ صرف مسلمانوں کے لئے ہی نہیں بلکہ تمام مذاہب کے لوگوں کے لئے قابل احترام ہے، بلدیہ عظمیٰ کراچی نے اس حوالے سے تمام تیاریاں مکمل کرلی ہیں،فائربریگیڈ اور سٹی وارڈنز محرم کی مجالس اور جلوسوں کے دوران انتظامات کے لئے موجود رہیں گے جبکہ کسی بھی شکایت کی صورت میں مرکزی کنٹرول روم 1339 پر رابطہ کیا جاسکتا ہے،ایم اے جناح روڈ پر مرکزی جلوس کے انتظامات کے سلسلے میں تمام کام جلد مکمل کرلئے جائیں گے، عباسی شہید اسپتال میں ڈاکٹرز کی ڈیوٹی لگا دی گئی ہے، تمام ڈی ایم سیز اور واٹر بورڈ اور کے الیکٹرک کے ساتھ مکمل کوآرڈینیشن ہے، تمام اداروں سے درخواست کی ہے کہ محرم الحرام کے دوران اپنی ذمہ داریاں احسن طریقے سے نبھائیں تاکہ عزاداروں اور دیگر شہریوں کو کوئی شکایت نہ ہو، اس موقع پر مختلف مذہبی جماعتوں اور تنظیموں سے تعلق رکھنے والے علمائے کرام اور دیگر نمائندوں نے اپنے اپنے علاقوں کے مسائل سے میئر کراچی کو آگاہ کیا جن میں زیادہ تر مسائل سالڈ ویسٹ مینجمنٹ ، پانی و سیوریج کی لائنوں کی مرمت ، اسٹریٹ لائٹس کی بحالی اور سڑکوں کی پیوندکاری سے متعلق تھے، خاص طور پر جن علاقوں میں مسائل کے حل کی طرف توجہ دلائی گئی ان میں ملیر جعفر طیار سوسائٹی، اورنگی ، نیو کراچی، سرجانی، کھارادر، ناظم آباد ، لیاقت آباد، کورنگی، لانڈھی اور دیگر علاقے شامل تھے، میئر کراچی وسیم اختر نے اجلاس میں موجود علمائے کرام کو یقین دلایا کہ جہاں تک ممکن ہے مسائل کے حل کے لئے کام کر رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ انچولی، امام بارگاہ کے بعد دو لاکھ رننگ فٹ کارپیٹنگ کرائی گئی ہے جبکہ رضویہ امام بارگاہ کے باہر ڈیڑھ لاکھ اور باب العلم امام بارگاہ کے باہر دو لاکھ رننگ فٹ کارپیٹنگ مکمل ہوچکی ہے جبکہ اس کے علاوہ نیو کراچی میں بھی 7 لاکھ اسکوائر فٹ کارپیٹنگ کا کام ہوا ہے اور شاہ خراسان کے اطراف ترقیاتی کام مکمل کردیا ہے جبکہ کارپیٹنگ جاری ہے، جعفر طیار اور اورنگی میں بھی کام کرارہے ہیں ، علمائے کرام اپنی ترجیحات کے مطابق مزید رہنمائی کریں تاکہ جاری ترقیاتی اسکیموں میں انہیں بھی شامل کرلیا جائے، اجلاس کے دوران شرکاء نے مطالبہ کیا کہ سندھ حکومت فوری طور پر بلدیاتی اداروں کو فنڈز جاری کرے اور سالڈ ویسٹ مینجمنٹ اور واٹر بورڈ کے اداروں کو میئر کراچی کے حوالے کیا جائے تاکہ شہر کا بنیادی انفراسٹرکچر بہتر بنایا جاسکے، انہوں نے کہا کہ وہ میئر کراچی وسیم اختر کے شکر گزار ہیں کہ انہوں نے محرم الحرام کے آغاز پر انہیں اس اجلاس میں مدعو کیا اور مختلف علاقوں میں درپیش مسائل سنے اور انہوں نے کہا کہ میئر کراچی کی سربراہی اور نگرانی میں ہی کراچی کے مسائل کو حل کیا جانا چاہئے،اس امید کا اظہار بھی کیا کہ یہ تمام مسائل جلد حل ہوجائیں گے، میئر کراچی وسیم اختر نے اس موقع پر اجلاس میں موجود محکمہ سالڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ کے نمائندے سے کہا کہ وہ اجلاس کے شرکاء کی طرف سے کچرے کو اٹھانے اور صفائی ستھرائی کے حوالے سے پیش کئے گئے مسائل نوٹ کرلیں اور اس سلسلے میں فوری اقدامات کریں، خاص طور پر ضلع جنوبی اور ضلع شرقی میں صورتحال بہتر بنائی جائے، آخر میں میئر کراچی وسیم اختر نے اجلاس میں شرکت کرنے والے مختلف مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے علماء اور دیگر نمائندوں کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ہم سب کا ایک ہی مقصد ہے وہ محرم کے مقدس مہینے میں شہر کو بہتر حالت میں رکھنا ہے محرم کا مہینہ ہم سب کے لئے قابل احترام ہے ،محرم الحرام کے دوران بین المسالک اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور اتحاد کی اہمیت دوچند ہوجاتی ہے ہمیں اپنے شہر میں امن و امان اور ترقی کے لئے باہمی اختلافات بھلا کر ایک دوسرے کا ساتھ دینا ہے، محرم کی مجالس اور عاشورہ کے جلوس سمیت تمام مذہبی اجتماعات کے انتظامات کے سلسلے میں درپیش مسائل باہمی اشتراک اور تعاون سے حل کئے جائیں گے یہ ہمارا شہر ہے اور ہمیں اپنی ذمہ داریاں ادا کرنا ہوں گی، اجلاس سے ڈی آئی جی سائوتھ جاوید عالم اوڈھو نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ محرم کے انتظامات کے سلسلے میں ہمارا اولین کام ٹیم ورک کو بہتر بنانا ہے ، علمائے کرام محرم میں جو بات بھی کریں وہ امت مسلمہ کے اتحاد و یکجہتی کے لئے ہونی چاہئے، امن و امان بہت بڑا چیلنج ہے جسے قائم رکھنے کے لئے ہرممکن اقدامات کئے جائیں گے، اجلاس کے آخر میں مختلف علمائے کرام بشمول علامہ طالب جوہری کی جلد صحت یابی اور محرم الحرام کے دوران اتحاد بین المسلمین کے قیام کے لئے دعا بھی کرائی گئی۔  
     
     
   
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard