Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ انسداد تجاوزات کے متاثرہ تاجروں کے لئے بلدیہ عظمیٰ کراچی کی دیگر مارکیٹوں میں فوری طور پر 1455 سے زائد دکانوں کی نشاندہی کردی گئی ہے-  
     
  10-Dec-2018  
     
   
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ انسداد تجاوزات کے متاثرہ تاجروں کے لئے بلدیہ عظمیٰ کراچی کی دیگر مارکیٹوں میں فوری طور پر 1455 سے زائد دکانوں کی نشاندہی کردی گئی ہے متاثرین کو قرعہ اندازی کے ذریعہ یہ دکانیں جلد حوالے کردی جائیں گی جبکہ وزیراعلیٰ سندھ کو سمری روانہ کی ہے منظوری کے فوری بعد دیگر متاثرین کو بھی دکانیں دی جائیں گی، ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کو اپنے دفتر میں سابق وفاقی وزیر حاجی حنیف طیب اور آل کراچی تاجر اتحاد کے چیئرمین عتیق میر کی قیادت میں آنے والے علیحدہ علیحدہ وفود سے ملاقات کے موقع پر کیا، لی مارکیٹ تاجر اتحاد کے وفد نے میئر کراچی سے کہا کہ وہ رضاکارانہ طور پر دکانیں خالی کرنے کے لئے تیار ہیں تاہم ایک مرتبہ ازسرنوسروے کردیا جائے جن دکانوں کی نشاندہی کی جائے گی ان کو خالی کردیا جائے گا جس پر میئر کراچی وسیم اختر نے سروے کے لئے اینٹی انکروچمنٹ اور اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کے افسران اور لی مارکیٹ تاجر اتحاد کے دو نمائندوں پر مشتمل کمیٹی قائم کرکے 11 ؍ دسمبر سے علاقے کا مکمل سروے کرنے کی ہدایت کی، میئر کراچی نے اس موقع پر کہا کہ جس تاجر کی بھی دکان کارروائی کی زد میں آئے گی اس کو اس سے اچھی جگہ پر متبادل دکان دی جائے گی تاکہ اس کا کاروبار متاثر نہ ہو اور اس کی آمدنی پر کوئی فرق نہ پڑے،بلدیہ کی دیگر مارکیٹوں میں چلتا ہوا کاروبار ہے اور انہی مارکیٹوں میں متاثرین کو متبادل دیا جارہا ہے توقع ہے کہ متاثرہ دکانداروں کے کاروبار اور آمدنی میں فرق نہیں پڑے گا، انہوں نے کہا کہ حکومت کسی ایک دکاندار کو بھی بے روزگار نہیں چھوڑے گی تاہم سپریم کورٹ کی ہدایت پر اب فٹ پاتھوں، پارکوں، نالوں اور سڑکوں پر کاروبار نہیں ہوسکتا ان سب لوگوں کو یہ جگہ خالی کرنا پڑیں گی اگر کے ایم سی نے ماضی میں ان جگہوں پر کسی کو بیٹھایا ہے وہ کرایہ بھی ادا کرتا ہے تو وہ غلط ہے اب ان غلط چیزوں کو درست کرنے کا وقت ہے تاجر اپنے شہر کو خود درست کریں ہم سب ایک پیج پر ہوں گے تو کسی کا نقصان نہیں ہوگا اور نہ ہی کاروبار متاثر ہونے دیا جائے گا،آل کراچی تاجر اتحاد کے چیئرمین عتیق میر نے کہا کہ جب میئر کراچی کہہ رہے ہیں کہ ہر متاثرہ تاجر کو متبادل ملے گا تو ہمیں یقین اور اطمینان کرنا چاہئے، حکومت کے اس موقف سے متاثرین کافی حد تک مطمئن ہوئے ہیں، لی مارکیٹ میں 8 ذیلی مارکیٹوں میں 936 دکاندار ہیں جو سرکار کے ساتھ ہر ممکن تعاون کے لئے تیار ہیں، انہوں نے کہاکہ فٹ پاتھ پر مسجد اور فلاحی کام بھی مناسب نہیں اگر کوئی 50 سال سے فٹ پاتھ پارک یا نالے پر کام کر رہا ہے تو اس کا ہرگز یہ مقصد نہیں کہ اس کو جاری رہنا چاہئے، کراچی کے تاجر حکومت کے ساتھ ہیں تاہم کوشش یہ کی جائے کہ کسی کے ساتھ زیادتی نہ ہو انہوں نے کہا کہ یہ درست ہے کہ لی مارکیٹ میں کے ایم سی کے کرایہ دار ہیں اور مالک کرایہ دار سے دکان خالی کرانا چاہتا ہے تو یہ اس کا حق ہے تاہم ایک کمیٹی قائم کی جائے جو ازسرنو سروے کرے ممکن ہے کہ کچھ لوگ بچ جائیں ،عتیق میر نے کچھ عناصر کی جانب سے اس مطالبے کو غیر ضروری اور بے وقت قرار دیا کہ ان لوگوں کے خلاف کارروائی کی جائے جنہوں نے ان مارکیٹوں کو آباد کیا تھا انہوں نے کہا کہ اگر کسی کے خلاف کارروائی ہو بھی جاتی ہے تو اس سے متاثرین کا کیا فائدہ ہوگا یہ مطالبہ متاثرین کا نہیں چند لوگ اپنی سیاست کے لئے ایسی باتیں کرتے ہیں انہوں نے انسداد تجاوزات کی جاری کارروائی کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ اگر آج یہ آپریشن تکمیل کی طرف نہیں جاتا تو پھر کراچی کبھی ٹھیک نہیں ہوسکتا انہوں نے کہا کہ کراچی میں پہلی مرتبہ تاریخ ساز کام ہو رہا ہے ہمیں یہ امید بھی نہیں تھی کہ کبھی قانون یہ بتائے گا کہ وہ کتنا طاقتور ہے اس موقع پر لی مارکیٹ سے تعلق رکھنے والے مختلف دکانداروں نے سوالات بھی کئے۔  
     
     
   
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard